GCWUF Logo


Government College Women University Faisalabad

Inauguration Ceremony of Auraaq-e-tehqeeq (August 7, 2017)

فیصل آباد() گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی میں شعبہ اردو کے پہلے تحقیقی مجلہ”اورق تحقیق”کی افتتاحی تقریب منعقد ہوئی جسکی صدارت وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نورین عزیز قریشی نے کی۔تقریب کے مہمان خصوصی عطا الحق قاسمی،مہمان اعزازڈاکٹر اصغر ندیم سید،ڈاکٹر نجیبہ عارف تھیں جبکہ ممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر نجمہ افضل،ممبر صوبائی اسمبلی فاطمہ فریحہ کے ساتھ ساتھ شہر کی دیگر نامور شخصیات نے بھر پور شرکت کی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے عالمی شہرت یافتہ ڈاکٹر اصغر ندیم سید،عطاالحق قاسمی نے کہا کہ شعبہ اردو کی طرف سے نکالا جانے وا لا پہلا مجلہ “اورق تحقیق”اس وقت کے بین الاقوامی معیار کے عین مطابق ہے اور اس کے لئے گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی قابل ستائش اور مبارک باد کی حقدار ہے انہوں نے کہا کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نورین عزیز قریشی کے زیر سایہ یونیورسٹی کے اوئل دور میں اہم ادبی وتحقیقی کارنامہ سر انجام دیا۔انہوں نے مزید کہا کہ علم میں نئی جہتیں ،نئے سوالات نئے سرے اور جستجو سے کرنا ہی تحقیق ہے۔انہوں نے کہا کہ اردو ہماری قومی اور سرکاری زبان ہے اس کے باوجود ہم نے اسے وہ معیار اور درجہ نہیں دے رکھا جو ایک قومی زبان کا ہونا چاہیے اور کہا کہ اردو ادب کو سمجھنے اور اس پر تحقیق کرنے کے لئے اس سے وابستہ تمام علوم ،تہذیب ،تمدن اور زمانوں کا جاننا ضروری ہے تاکہ اس سے مکمل طور پر مستفید ہوا جاسکے۔ڈاکٹر نجیبہ عارف نے کہا کہ تحقیق اور تنقید دو الگ چیزیں ہیں جب تحقیق کا کام شروع ہو جاتا ہے تو تنقید کے مراحل کا سامنا بھی رہتا ہے اور کہا کہ یہ صبر آزماکام ہے اس کے لئے ادارا مبارک باد کا حق دار ہے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نورین عزیز قریشی نے کہا کہ میرے لئے بہت خوشی اور اعزاز کی بات ہے کہ گورنمنٹ کالج جو کہ 2013میں یونیورسٹی بنا اس قلیل مدت میںآج اپنا پہلا تحقیقی مجلہ شائع کر رہا ہے اور اپنی تحقیق کو کتاب کی صورت میں آنے والی نسلوں کے لئے محفوظ کررہا ہے ا نہوں نے کہا کہ یونیورسٹی میں ریسرچ کلچر کو فروغ دینے میں یہ تحقیقی مجلہ ایک اہم سنگ میل کا کردار ادا کرے گا۔انہوں نے مدیر اعلی پروفیسر ڈاکٹر طاہرہ اقبال اور ان کی پوری ٹیم کو مبارک باد دی اور کہا کہ ایسے لوگوں کی خدمات قابل فخر ہیں جو اپنی تحریروں کے زریعے معاشرے کی سوچ کا دھارا بدلتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ بہت جلد مجلہ ایچ ای سی سے منظور کروایا جائے گا اردو ادب سے تعلق رکھنے والوں کے لئے اوراق تحقیق ترقی کا نیا باب رقم کرے گا۔